85 کمرشل سرکاری اداروں کی کارکردگی غیر تسلی بخش ہے: مشیر خزانہ کو بریفنگ

وزیراعظم کے مشیر برائے خزانہ عبد الحفیظ شیخ کو بریفنگ میں بتایا گیا ہے کہ 19 وفاقی وزارتوں کے زیر انتظام 85 کمرشل سرکاری ادارے کام کر رہے ہیں، تمام سرکاری اداروں کی کارکردگی غیر تسلی بخش ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کے مشیر برائے خزانہ عبد الحفیظ شیخ کی زیر صدارت سرکاری اداروں سے متعلق کابینہ کی خصوصی کمیٹی کا اجلاس ہوا۔

اجلاس کے دوران سرکاری اداروں میں گورننس اصلاحات کے امور کا جائزہ لیا گیا، سرمایہ پاکستان لمیٹڈ کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کی تنظیم نو کے امور پر بات چیت کی گئی۔

اجلاس کے دوران کفایت شعاری کے بارے میں سفارشات کی تیاری کیلئے وفاقی وزیر صنعت حماد اظہر کی سربراہی میں سب کمیٹی قائم کر دی گئی۔

مشیر خزانہ کو بریفنگ دی گئی کہ 19 وفاقی وزارتوں کے زیر انتظام 85 کمرشل سرکاری ادارے کام کررہے ہیں، تمام سرکاری اداروں کی کارکردگی غیر تسلی بخش قرار دیدی گئی۔

بریفنگ میں مزید بتایا گیا کہ مالی سال 2017-18ء کے دوران مختلف سرکاری اداروں کو 143 ارب فراہم کئے گئے، اس عرصہ میں 204 ارب کیش ڈویلپمنٹ قرضے اور 27 ارب کی ایکویٹی دی گئی، تمام اقدامات کے باوجود ان اداروں کا خسارہ 265 ارب روپے رہا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں